اوئی چوہا

مسٹر چوہے روز لوگوں سے بھری ہوئی بس کو سڑک پر فراٹے بھرتے دیکھتے ، ان کا بھی جی چاہتا کہ وہ بس کی سیر کریں، لیکن چھوٹے پاؤں ہونے کی وجہ سے اتنی لمبی چھلانگ نہ لگا سکتے تھے کہ پائیدان پر جا چڑھیں۔

بھول بھلکڑ

کسی جنگل میں ایک ننھا منا ہاتھی رہا کرتا تھا۔ نام تھا جگنو۔ میاں جگنو ویسے تو بڑے اچھے تھے۔ ننھی سی سونڈ، ننھی سی دم اور بوٹا سا قد، بڑے ہنس مکھ اور یاروں کے یار، مگر خرابی یہ تھی کہ ذرا دماغ کے کمزور تھے۔

بادشاہ اور قیدی

کسی بادشاہ نے ایک قیدی کے قتل کا حکم دیا۔ قیدی بیچارہ جب زندگی سے ناامید ہو گیا تو اس نے بادشاہ کو بُرا بھلا کہا اور گالیاں دیں۔

بال جبر یل - دعا

ہے یہی میری نماز ، ہے یہی میرا وضو
میری نواؤں میں ہے میرے جگر کا لہو
.

قائد اعظم اور رتی جناح

20 فروری1929 کو ویں 29 سالگرہ پر رتی کا انتقال ہوا۔جب ممبئی کی ایک تازہ قبر میں اتارا جا رہا تھا تو آٹھ برس بعد رتی کو یوں دیکھنے والا جناح بت بنا ہوا تھا۔

بلخ کی تاریخ

صوبہ بلخ کے باعث چار ہزار سال سے افغانستان کو ایشیا میں سیاسی، معاشی، مذہبی اور سماجی لحاظ سے اہمیت حاصل ہے۔

شہزادہ فرڈینینڈ کا سرائیوو کا دورہ

ہم آپ کو بی بی سی کے اس صفحے پر خوش آمدید کہتے ہیں جہاں ہم ایک نہایت اہم اور تاریخی واقعے کی خبر آپ تک پہنچا رہے ہیں جو ایک سو سال پہلے آج کے ہی دن پیش آیا تھا۔ یہ واقعہ تھا آرچ ڈیوک فرانز فرڈینینڈ پر قاتلانہ حملہ جو کہ سرائیوو میں ہوا تھا

سموسے کی کہانی

آج کے دور میں یہ سمجھا جاتا ہے کہ سموسہ برصغیر کی ڈش ہے لیکن اس سے وابستہ تاریخ کچھ اور ہی داستان بتاتی ہے۔

ٹروجن سیارہ زمین کے قریب دریافت

ماہر فلکیات نے زمین کے قریب ایک چھوٹا سیارہ دریافت کیا ہے جو زمین کے ہی مدار میں سورج کے گرد چکر لگا رہا ہے۔

شہد کی مکھیاں دماغی نقشوں سے راستہ تلاش کرتی ہیں

محققین کا کہنا ہے کہ شہد کی مکھیاں پرندوں اور ممالیہ جانوروں کی طرح اپنے دماغی نقشوں کی مدد سے گھر جانے کا راستہ تلاش کرتی ہیں۔

شہابیے پر ہمالیہ سے دوگنا اونچا پہاڑ

خلائی سیارے ڈان سے موصول ہونے والے اعداد و شمار کا جائزے لینے سے معلوم ہوتا ہے کہ اس بہت بڑی چٹان نما شہابیہ کے جنوبی قطبی خطے میں دو بڑے شدید نوعیت کے کٹاؤ ہیں۔

جنگ عین جالوت، تاریخ ساز معرکہ

موسم بہار میں جب قاہرہ کے شہری روزمرہ کی زندگی میں مصروف تھے تو مملوک سلطان مظفر سیف الدین قطز کو اک ایسے خطرے کا سامنا تھا، جس سے اس وقت کے حاکم تھر تھر کانپتے تھے

سونا اتنا اہم اور قیمتی کیوں ہے؟

پیریاڈک ٹیبل میں سونا واحد عنصر ہے جسے ہم انسانوں نے ہمیشہ کرنسی کے طور پر استعمال کرنے کو ترجیح دی ہے

ستاروں کو کھانے والی کہکشاں

تحقیق کے مطابق ایک بڑی کہکشاں اینڈرو میڈا دیگر کہکشاؤں کے ستاروں کو اپنے اندر جذب کر رہی ہے۔

رامائن کا ایک نادر نسخہ

برٹش لائبریری نے ڈیڑھ سو برس میں پہلی مرتبہ ہندوؤں کی کتاب رامائن کے ایک نادر نسخے کو ڈیجیٹل ٹیکنالوجی کے استعمال سے یکجا کیا ہے۔

سنہ 1969، جب انسان نے پہلی بار چاند پر قدم رکھا

صدر جان ایف کینیڈی نے کہا تھا: ’ہماری قوم کو یہ ہدف حاصل کرنے کا عزم کرنا ہوگا، اس سے پہلے کہ یہ عشرہ بیت جائے۔ اور یہ ہدف ہے چاند پر انسان کے قدم رکھنے کا اور بحفاظت زمین پر واپس پہنچنے کا

چاند کی سطح پر 200 کلو میٹر وسیع گڑھا دریافت

سائنسدانوں نے چاند پر زمین کی جانب 200 کلومیٹر گہرا ایک گڑھا دریافت کیا ہے جس کی عمر تقریباً چار ارب سال بتائی جا رہی ہے۔

پلوٹو

پلوٹو نظام شمسی سے باہری علاقے یا تیسرے زون کوئپر پٹی میں پایا جانے والا سب سے بڑا سیارچہ ہے جو اب تک دریافت ہوا ہے اور زمین سے 4.8 ارب کلومیٹر سے زیادہ فاصلے پر ہے۔

پلوٹو سرخ ہو رہا ہے

ناسا کے سائنس دانوں کا کہنا ہے کہ پلوٹو سیارہ، جو ہمارے نظامِ شمسی کے کنارے پر محوِ گردش ہے، کافی تیزی سے سرخ ہوتا جا رہا ہے۔

پودے خوراک ذخیرہ کرنے کے لیے حساب کتاب کرتے ہیں

سائنسدانوں کو معلوم ہوا کہ پودوں میں ریاضی کے حساب کتاب کرنے کی صلاحیت قدرتی طور پر موجود ہوتی ہے جو اُس کو رات کے وقت خوراک ذخیرہ کرنے مدد دیتی ہے۔

پاکستان میں زلزلے کیوں آتے ہیں

پاکستان میں زیادہ زلزلے شمال اور مغرب کے علاقوں میں آتے ہیں جہاں زمین کی سطح کے نیچے موجود غیر یکساں تہیں یعنی انڈین ٹیکٹونک پلیٹ ایرانی اور افغانی یوریشین ٹیکٹونک پلیٹوں کے ساتھ ملتی ہے۔

نظام شمسی کے سب سے بڑے چاند گینیمیڈ پر سمندر کے شواہد

سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ شمسی نظام کے سب سے بڑے چاند گینیمیڈ کی سطح پر برف کے نیچے سمندر کے شواہد ملے ہیں۔

سر ہانس سلوان

سر ہانس سلوان کا تاریخ میں ایک انفرادی مقام ہے۔ اور اس کی وجہ یہ ہےکہ ہ جانوروں اور پودوں کے نمونوں کے علاوہ میڈلز، سکے، کتابیں، مجسمے، ڈرائینگز اور بہت سی چیزوں کو اکھٹا کرنے کا شوق رکھتے تھے۔

مسلم سائنسداں - ابن ابی اصیبعہ

ان کا پورا نام “موفق الدین ابو العباس احمد بن سدید الدین القاسم” ہے، ان کا تعلق طب میں مشہور ایک خاندان سے تھا اور موفق الدین اس خاندان کے مشہور ترین فرد تھے، 600 ہجری میں دمشق میں پیدا ہوئے

مسلم سائنسداں - ابنِ باجہان

ابنِ باجہان کا پورا نام “ابو بکر بن یحیی بن الصائغ الثجیبی” ہے “ابن باجہ” کے لقب سے مشہور ہوئے، وہ اندلس میں عرب کے سب سے پہلے مشہور فلسفی تھے، فلسفہ کے علاوہ وہ سیاست، طبیعات، علمِ فلک، ریاضی، موسیقی اور طب میں بھی مہارت رکھتے تھے

چار نئے کیمیائی عناصر کے نام

یہ چاروں عناصر مصنوعی ہیں اور انھیں تجربہ گاہ میں دو چھوٹے ایٹمی مراکز کو مدغم کر کے تیار کیا گیا ہے۔

کائنات کی سب سے ٹھنڈی جگہ

فرانس اور سوئٹزرلینڈ کی سرحد پر ایک سرنگ کے اندر علم طبیعات کے تجربات کے لیے بنائی جانے والی لیبارٹری کائنات کی سب سے ٹھنڈی جگہ ثابت ہو رہی ہے۔

کئی عشروں کے تعطل کے بعد انقلابی اینٹی بائیوٹک کی دریافت

امریکی سائنس دانوں نے کئی عشروں کے تعطل کے بعد ایک نئی اینٹی بائیوٹک دریافت کی ہے۔

آبِ زَم زَم

زَم زَم دراصل مکّہ کے اس چشمے / کنویں کا نام ہے ،جس سے آبِ زَم زَم نکلتا ہے یہ وہ پانی ہے جو مقدس سمجھا جاتا ہے۔

فریز بیرن نوپسکا

ہنگری سے تعلق رکھنے والے فریز بیرن نوپسکا ان پہلے لوگوں میں شامل ہیں جنھوں نے یہ سوچنا شروع کیا کہ معدوم ہو جانے والے جانور کیسے رہتے سہتے تھے۔

دماغ ذائقے کو کیسے پہچانتا ہے

امریکی سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ انھوں نے دماغ میں ذائقے کے پانچ درجوں، نمکین، تلخ، ترش، شیریں اور خوشگوار ذائقہ کو پہچاننے والے مخصوص نیورون کا پتہ چلا لیا ہے۔

دنیا کا ’قدیم ترین کیلنڈر‘ دریافت

ماہرینِ آثارِ قدیمہ کا کہنا ہے کہ انھوں نے سکاٹ لینڈ کے آبرڈین شر میں دنیا کا قدیم ترین قمری ’کیلنڈر‘ دریافت کر لیا ہے۔

دماغ نیند میں اپنے اندر کی صفائی کرتا ہے

ایک تحقیق کے مطابق دماغ پورے دن کی تھکا دینے والی مصروفیات کے دوران پیدا ہونے والے زہریلے مواد کو نیند میں صاف کرتا ہے۔

دنیا کی اب تک کی قدیم ترین تحریر دریافت

چین میں آثار قدیمہ کے ماہرین نے کہا ہے کہ انہوں نے پتھر کے دو قدیم ٹکڑوں پر کھدا ہوا ایک ایسا نوشتہ دریافت کیا ہے جو دنیا میں اب تک دریافت ہونے والی قدیم ترین تحریروں میں سے ایک ہوسکتی ہے۔

پاکستانی کرنسی کی تاریخ

ہندوستان کی آزادی سے ایک دن قبل 14اگست1947 کو پاکستان نے آزادی حاصل کی تھی۔

نوبیل انعام کی تاریخ

نوبیل امن انعام 1901 میں شروع ہوئے۔ ناروے کی نوبیل کمیٹی ہر سال اکتوبر میں امن انعام کا اعلان کرتی ہے۔ کیمٹی کا فیصلہ حتمی ہوتا ہے۔

آشوک ساحل

ذکرِ رسولِ پاک ہے جب سے زبان پر
رحمت برس رہی ہے میرے خاندان پر

بششور پرشاد منور

زبانِ حال ہے شاہد، زبانِ قال گواه
کلامِ پاک خدا، بات، بات آپ کی ہے

پنڈت آنند موہن گلزار زتشی

پر تو حسن زاد آئے تھے
پیکر التفات آئے تھے

پنڈت دتا تریا کیفی

ہو شوق نہ کیوں نعتِ رسولِ دوسرا کا
مضموں ہو عیاں دل میں جو لولاک لما کا

پنڈت دیا شنکر نسیم

ہر شاخ میں ہے شگوفہ کاری
ثمرہ ہے قلم کا حمد باری

پنڈت ہری چند اختر

سبز گنبد کے اشارے کھینچ لائے ہیں ہمیں
لیجئے دربار میں حاضر ہیں اے سرکار ہم

پنڈت گیا پرساد خودی

زندگی میں زندگی کا حق ادا ہو جائے گا
تو اگر اے دل غلام مصطفٰے ہو جائے گا

راجیندر بہادر موج

حضرت کی صداقت کی عالم نے گواہی دی
پیغام الہٰی ہے پیغام محمد کا

رانا بھگوان داس جسٹس آف پاکستان

نبیِ مکرم شنہشاہ عالی
بہ اوصافِ ذاتی و شانِ کمالی

رانا بھگوان داس جسٹس آف پاکستان

خوشا بختے دو عالم را کہ ختمِ مرسلاں آمد
حبیبِ کبریا آمد،رسول ِدو جہاں آمد

رگھوپتی سہائے فراق گورکھپوری

انوارہیں بے شمار معدود نہیں
رحمت کی شاہراہ مسدود نہیں

ایڈورڈ ٹائسن

سنہ 1651 میں پیدا ہونے والے ایڈورڈ ٹائسن کو انسانوں اور جانوروں کے جسم کی اندرونی ساخت کے مطالعے کا موجد مانا جاتا ہے۔

ایلفرڈ رسل والیس

سائنس کی تاریخ میں نظریہ ارتقاء بہت زیادہ اہم ہے۔ چارلس ڈاروین اور ایلفرڈ رسل وہ دو نام ہیں جنھوں نے مل کر اسے دریافت کیا۔ لیکن اگر والیس نہ ہوتے تو یہ نظریہ شائع نہ ہوسکتا۔

ایٹونیو وان لیوین ہوئک

ولندیزی سائنس دان لیوین ہوئک سنہ 1632 میں پیدا ہوئے۔ وہ پہلے شخص تھے جنھوں نے خوردبینی جاندار یعنی بیکٹیریااور خون بنانے والے خلیوں کو دیکھا۔

انٹارکٹکا کی مدفون جھیل میں نئے جراثیم

روسی سائنس دانوں نے دعویٰ کیا ہے کہ انھوں نے انٹارکٹکا کی ایک مدفون جھیل میں نئی قسم کی جراثیمی زندگی دریافت کی ہے۔

پاک ٹی ہاؤس

ء میں ایک سکھ بوٹا سنگھ نے انڈیا ٹی ہاؤس کے نام سے یہ چائے خانہ شروع کیا - بوٹا سنگھ نے 1940ء سے 1944ء تک اس چائے خانہ و ہوٹل کو چلایا مگر اس کا کام کچھ اچھے طریقے سے نہ جم سکا

ہندوستان کی قدیم ترین مسجد

کہا جاتا ہے کہ ہندوستان کی پہلی مسجد پیغمبر اسلام کی زندگی کے دوران ہی کیرالہ کے کوڈنگلور علاقے میں قائم کی گئی تھی۔

بازارِ حسن

رقص و موسیقی کی جو عظیم روایت نوابوں، جاگیرداروں، راجوں اور مہاراجوں کے درباروں میں پروان چڑھی تھی وہ تو جاگیروں اور راجواڑوں کے ساتھ ہی دم توڑ گئی لیکن بازارِ حسن کی شکل میں اس کی جو باقیات رہ گئی تھیں، اب وہ بھی آخری دموں پر ہیں۔

صوبیدارخداداد خان

پچھلے ایک سو اٹھاون برس سے دنیا بھر میں جانا مانا وکٹوریہ کراس ان لوگوں کے سینے پر سجتا ہے جنھوں نے دشمن سے کسی مڈھ بھیڑ، لڑائی اور جنگ کے بیچوں بیچ کوئی انہونا یا حیران کن جنگی کارنامہ کردکھایا ہو۔ یہ تمغہ اٹھارہ سو چھپن میں ملکہ وکٹوریہ کے حکم پر جاری ہوا اور اسے اٹھارہ سو چوّن میں کریمیا کی جنگ میں روس سے چھینی دو توپوں کی دھات سے تیار کیا جاتا ہے۔

وارث شاہ

وارث شاہ پنجابی زبان کے شہرہ آفاق اور عظیم المرتبت شاعر ہیں۔ ان کی پنجابی شاعری کو عالمگیر حیثیت حاصل ہے اور ’’ہیر‘‘ کا شمار ادبیات عالیہ میں کیا جاتا ہے۔

خانۂ کعبہ کی تعمیر

خانۂ کعبہ کی تعمیراب تک جملہ گیارہ مرتبہ ہوئی ہے جن میں نئے سرے سے تین مرتبہ تعمیر ہوئی۔

تربوزہ

تربوزہ کو گرمیوں کا عالمی پھل بھی کہا جا سکتا ہے جو نہایت خوش ذائقہ ہونے کے ساتھ سرد تاثیر رکھتا ہے۔

ٹیپو سلطان کی پڑ پوتی نور عنایت خان

میسور کے سابق حکمراں ٹیپو سلطان کی پڑپوتی نور عنایت خان نے دوسری جنگ عظیم کے دوران برطانیہ کا ساتھ دیا تھا۔ انہوں نے زبردست بہادری اور جرات مندی کا ثبوت دیا جس پر ان کی سوانح نگار شربانی باسو نے انہیں ’جاسوس شہزادی‘ کا خطاب دیا ہے۔

سرخ مرچ

ایک نئی تحقیق میں مرچ مسالےدار پکوان کوانسان کی لمبی عمر کے ساتھ منسلک کیا گیا ہے ماہرین نے تجویز کیا ہےکہ،مسالے والے کھانوں کے انہی چٹخاروں اورمرچوں کی تلخی میں ہماری لمبی عمرکا راز پوشیدہ ہو سکتا ہے۔

سٹیون پال جابز

سٹیون پال جابز چوبیس فروی کو سنہ انیس سو پچپن میں سان فرانسسکو میں پیدا ہوئے تھے۔ ان کے والد عبدالفتّاح جندلی کا تعلق شام سے تھا اور ماں کا نام جوانی شیبیل تھا۔ یہ دونوں یونیورسٹی میں دوست تھے ۔ والدین نے انہیں اپنے پاس رکھنے کے بجائے انہیں دوسروں کو گود لینے کے لیے پیش کیا اور کیلیفورنیا کے ایک جوڑے پال اور کارلا نے انہیں گود لیا تھا-

ہم جمائیاں کیوں لیتے ہیں؟

یہ سچ ہے کہ ہم نیند کی کمی سے نمٹنے کے لیے جمائی لیتے ہیں لیکن جمائی ہمیں جگا کر نہیں رکھتی ہے بلکہ دماغ کو صحیح درجہ حرارت پر کام برقرار رکھنے میں مدد دیتی ہے۔

پالک

ایک نئی تحقیق سے پتا چلا ہے کہ پالک غیر صحت مندانہ کھانوں کی بھوک کی اشتہا کو کم کرتا ہے اور وزن گھٹانے میں مددگار ہے۔

یابا

یابا نے سٹیون ہیرلڈ گیسکوئن کے نام سے دنیا میں جنم لیا لیکن بچپن سے باتونی ہونے کے سبب وہ یابا کے نام سے پہچانے گئے

رکن الدین بیبرس

یہ جنوبی جرمنی کے ایک چھوٹے سے شہر کے 36 سالہ بڑھئی جارج ایلزر کی کہانی ہے جو جنگ عظیم دوئم کے اوائل میں اڈولف ہٹلر کو مارنے کے بہت قریب پہنچ گئے تھے۔

میاں محمد بخش ؒ المعروف عارفِ کھڑی شریف

آپ کی ولادت ۱۸۲۴ء میں بمقام کھڑی شریف، میر پور موجودہ آزاد کشمیر میں ہوئی۔ آپ نے علاقے کی مشہور دینی درسگاہ سمر شریف میں تعلیم حاصل کی۔ حافظ غلام حسین ؒ سے علمِ حدیث کی تعلیم حاصل کی۔ اس کے علاوہ حافظ ناصر ؒ سے دینی علوم کے علاوہ شعر و ادب کے رموز سے بھی آشنائی حاصل کی

جارج ایلزر

یہ جنوبی جرمنی کے ایک چھوٹے سے شہر کے 36 سالہ بڑھئی جارج ایلزر کی کہانی ہے جو جنگ عظیم دوئم کے اوائل میں اڈولف ہٹلر کو مارنے کے بہت قریب پہنچ گئے تھے۔

ہاشم خان

پشاور سے خیبر ایجنسی جانے والے راستے پر واقع ایک معمولی سے گاؤں نواں کلی کے 8 سالہ بچے نے اپنے والد کے ہمراہ پشاور میں قائم برطانوی افواج کے افسران کے کلب میں قدم رکھا۔ درۂ خیبر کی حفاظت کی ذمہ داری پر مامور انگریز افواج کے لیے بنائے گئے کلب میں مختلف کھیلوں کے میدان تھے۔

زیڈ اے بخاری استاد بندو خان اور عالم دین

ذوالفقار علی بخاری صاحب جیسا حاضر دماغ اور اعلیٰ پایہ کا بذلہ سنج مشکل ہی سے پیدا ہوتا ہے۔ لطیفہ گوئی، پھبتی، شوخی، شرارت ان کی شخصیت کا اٹوٹ حصہ تھے۔

میرا اقبال

میرا ارادہ تھا کہ میں اقبال کی میت کا آخری دیدار نہ کروں۔ میں نہیں چاہتا تھا، ان کے موت کی افسردگی سے ہم کنار چہرے کی جھلک میرے ذہن سے

اے حمید

اے حمید 25 اگست 1928ء کو امرتسر میں پیدا ہوئے۔ میٹرک امرتسر سے کیا۔ قیام پاکستان کے بعد پرائیویٹ طور پر ایف اے پاس کرکے ریڈیو پاکستان پراسسٹنٹ اسکرپٹ ایڈیٹر مقرر ہوئے۔ کچھ عرصہ ریڈیو پاکستان میں ملازمت کے بعد وائس آف امریکہ سے وابستہ ہوئے۔

احسان دانش

احسان دانش 1914ء میں کاندھلہ، مظفر نگر (یوپی) میں پیدا ہوئے تھے۔ والدین کی غربت کی وجہ سے چوتھی جماعت سے آگے نہ پڑھ سکے تاہم اپنے طور پر اردو، فارسی اور عربی زبان کا مطالعہ کیا

ابن صفی

1950ء کی بات ہے محفل شباب پر تھی، موضوع تھا کہ اردو ادب میں آج کل کیا کچھ پڑھا جا رہا ہے۔ اس محفل کے روح رواں پانچ دوست تھے۔ اسرار احمد، جمال رضوی، مجاور حسین، آفاق حیدر اور عباس حسینی، مجاور حسین نے کہا۔ ’’اردو کے سری ادب میں طبع زاد لکھنے والے نہیں ہیں۔ جو کچھ بھی چھپ رہا ہے وہ انگریزی کا ترجمہ ہے۔

ہندوستانی شیکسپیئر آغا حشر

آغا حشر یکم اپریل 1879 کو بنارس میں پیدا ہوئے تھے۔ تعلیم تو زیادہ نہیں پائی لیکن مطالعے کے شوق کی ایک مثال منٹو کی زبانی سن لیجیے: ’اتنے میں پان آ گئے جو اخبار کے کاغذ میں لپٹے ہوئے تھے۔

آب آب کر مر گئے، سرہانے دَھرا رہا پانی

اس کہاوت سے ایک کہانی منسوب ہے۔ کوئی شخص ہندوستان سے باہر گیا اور وہاں سے فارسی سیکھ کر واپس آیا۔ اپنی فارسی دانی پر اس کو بہت ناز تھا۔

آپ سے آتی ہے تو آنے دو

یہ کہاوت ایسے موقع پر استعمال کی جاتی ہے جب کوئی شخص کسی نا جائز چیز کو اپنے لئے جائز قرار دینے کا حیلہ تلاش کر رہا ہو۔ اس کہاوت سے ایک کہانی منسوب ہے۔

آپ کی جوتیوں کا صدقہ ہے

یعنی جو کچھ بھی ہے وہ آپ کی ہی بدولت ہے اور اس میں میرا کوئی ہاتھ نہیں ہے۔ ’’جوتیوں کا صدقہ‘‘ سے مراد ہے کہ آپ کے لئے یہ سب کرنا کوئی بڑی بات نہ تھی۔

آپ کا نوکر ہوں ، بینگن کا نہیں

مغل بادشاہ جلال الدین محمد اکبر کے دربار کے نو رتنوں میں ایک بیربلؔ بھی تھے۔ قصہ مشہور ہے کہ ایک دن بادشاہ کے کھانے میں بینگن آئے۔

مہرگڑھ کا انمول تاریخی ورثہ

مہرگڑھ کی تباہی کی ایک اور وجہ یہ بھی ہے یہ کہ اسے آج تک یونیسکو کے عالمی ثقافتی ورثے کی فہرست میں شامل نہیں کروایا جا سکا۔

تھڑا کلچر

یونس ادیب اپنی کتاب ’’میرا شہرلاہور‘‘میں لکھتے ہیں کہ اندرون شہر کی مجلسی زندگی کے دو بڑے مراکز حمام اور تھڑا تھے اور انہی دو جگہوں پر تبادلۂ خیال ہوتا تھا۔

خبردار یہ پہلی دفعہ ہے

میں نے بدوؤں کی مہمان نوازی کی کہانیاں سنی تھیں کہ جو بدو شہروں سے دور صحرا میں رہتے ہیں وہ واقعی مہمانوں کو سرآنکھوں پر لیتے ہیں ۔کوئی آجائے تو یہ کبھی نہیں کہاجاتا کہ صاحب گھر میں نہیں ہیں

انسانی ناک پر ایک تقریر

تھوڑے ہی دنوں کی بات ہےکہ ایشیائے کوچک میں کھدائی ہوئی تو ایک عظیم الشان سلطنت کے آثار برآمد ہوئے۔۔۔

خلا سے زمین پر انگریزی کےحروف تہجی

امریکی خلائی ادارے ناسا نے خلا سے زمین کی لی گئی مختلف مقامات کی تصاویر کو انگریزی کے 26 حروف تہجی سے مشابہت دی ہے۔

دو بہادر بھائی

ایک دفعہ کا ذکر ہے اسپین کے کسی شہر میں ایک غریب آدمی رہتا تھا جو جوتوں کی مرمت کیا کرتا تھا۔ وہ بس اتنا کما لیتا تھا کہ مشکل سے اُس کا اور اُس کے بیوی بچوں کا پیٹ بھرتا تھا۔

ظالم کارلینکو

کسی زمانے کی بات ہے کہ ایک پیاری سی بکری اپنی تین ننھی ننھی بیٹیوں کے ساتھ ایک چھوٹی سی کٹیا میں ہنسی خوشی رہتی تھی۔

چاندی کا فرشتہ

یہ اس زمانے کی بات ہے جب اسپین پر اہل فِنیشیا کی حکومت تھی اور اسپین کے باشندے زمین سے معدنیات نکالا کرتے تھے۔

ننھی چیونٹی

ایک دفعہ کا ذکر ہے کہ ایک ننھی چیونٹی تھی جو بہت صبح منھ اندھیرے اٹھ بیٹھتی تھی۔ وہ بہت محنتی اور صفائی پسند تھی۔

سیراگوسا چلو یا واپس تالاب

ایک دفعہ کا ذکر ہے کہ گیلیسیاکا ایک دیہاتی سیراگوسا نامی شہر میں کام تلاش کرنے کے لئے اپنے گھر سے نکل پڑا۔

بیوقوف بھیڑیا اور چالاک لومڑی

کسی زمانے کی بات ہے کہ ایک لومڑی اپنے دو بچوں کے ساتھ ایک جھرنے کے کنارے جھونپڑی میں رہا کرتی تھی۔

گانے والا تھیلا

کسی زمانے کی بات ہے کہ ایک عورت تھی جس کی صرف ایک بیٹی تھی۔ وہ بچی بہت پیاری تھی اور اُس کی ماں اُس سے بہت محبت کرتی تھی۔

بدصورت شہزادی

ایک دفعہ کا ذکر ہے کہ ایک بادشاہ تھاجس کی صر ف ایک ہی بیٹی تھی۔ وہ اس قدر بدصورت تھی کہ کوّے تک اُس کو دیکھ کر ڈر جاتے تھے۔ جب وہ سڑک پر سے گزرتی تھی تو بچے اُسے ڈائن یا جادوگرنی سمجھ کر ڈر کے مارے اِدھر اُدھر چھپ جاتے تھے۔

آدھا چوزہ

بہت دنوں کی بات ہے کہ اسپین کے ایک کسان کے باڑے میں ایک خوبصورت سیاہ مرغی رہا کرتی تھی۔ بہا ر کا موسم تھا اور وہ بہت سے انڈوں کے ڈھیر پر بیٹھی اُن کو سِے رہی تھی۔ جب ایک ایک کر کے ننھے ننھے چوزے انڈوں سے نکلنے لگے تو وہ خوشی اور غرور سے پھولی نہ سمائی۔

بلینکا فلور

ایک دفعہ کا ذکر ہے کہ ایک امیر آدمی تھا جس کے تین بیٹیاں تھیں۔ وہ تینوں پھولوں سے بھی زیادہ خوبصورت تھیں۔ ایک دن وہ آدمی جنگل کی سیر کو گیا جو اُس کے گھر کے قریب ہی تھا۔

کچھ ذکر فیض کی بذلہ سنجی کا

ایک بار ایک شخص نے دروازے پر آ کر گھنٹی بجائی۔ میں نے کہا کہ فیض تو گھر میں نہیں ہیں۔

احمد فراز

احمد فراز صاحب سے پوچھا گیا کہ کیا آپ کو شروع ہی سے ادیب اور شاعر بننے کا شوق تھا جیسے بچوں کو ہوتا ہے ڈاکٹر اور انجینئر وغیرہ

بھارت کے واٹر ٹینک

بھارت کے ضلع جالندھر میں انوکھے واٹر ٹینکس کے ڈیزائن

انتظار حسین کا انتظار تمام ہوا

دسمبر 1923 میں بلند شہر کے نواحی گاؤں ڈبائی میں میرا جنم ہوا۔ والدین کو چار بیٹیوں کے بعد کسی بیٹے کا انتظار تھا لہذا میرا نام انتظار حسین یوں رکھا گیا۔

بد شکل شہزادے کی سمجھ داری

ایک شہزادہ بدصورت تھا اور اس کا قد بھی چھوٹا تھا۔ اس کے دوسرے بھائی نہایت خوبصورت اور اچھے ڈیل ڈول کے تھے۔

ممبئی میں ناشتہ دان پہنچانے کا وسیع مگر پیچیدہ نظام

ممبئی میں ڈبے والے روزانہ دو لاکھ ناشتہ دان گھروں سے دفتروں تک پہنچاتے ہیں۔

بال جبر یل - شاہیں

کیا میں نے اس خاک داں سے کنارا
جہاں رزق کا نام ہے آب و دانہ
.

بال جبر یل - قطعات

رہ و رسم حرم نا محرمانہ
کلیسا کی ادا سوداگرانہ
.

مخلص دوست

ایک پتھر درخت کی سب سے بالائی شاخ پر بیٹے ہوئے طوطے کو لگا اور وہ پھڑپھڑاتا ہوا شاخ سے گر کر نیچے زمین پر آن گرا…. اسے تڑپتا دیکھ کر ندیم کی آنکھوں میں چمک سی آ گئی، ہونٹوں پر مسکراہٹ تیرنے لگی۔ .

نااہل بادشاہ

دریا کے اس پار جنگل کے تمام جانوروں نے جنگل کے بادشاہ شیر کے خلاف بغاوت کا اعلان کر دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ صدیوں پر محیط فرسودہ اور آمرانہ نظام کا خاتمہ ہونا چاہیے .

دہی ذیابیطس سے محفوظ رکھ سکتا ہے

وسیع پیمانے پر کی جانے والی ایک تحقیق کے مطابق ہر روز دہی کا ایک چھوٹا سا حصہ کھانا ذیابیطس سے بچاؤ میں مددگار ثابت ہوتا ہے۔

کاتبینِ پیغمبرِ اعظمﷺ — ایک تعارف

حیدرآباد کے مشہور و معروف محقق ڈاکٹر محمد حمید اللہ رحمۃ اللہ علیہ نے دربارِ نبوی صلی اللہ علیہ وسلم میں لکھے گئے دستاویزات جمع فرمائے ہیں، ہر دستاویز پر لکھنے والے صحابۂ کرام کے نام بہ حیثیت کاتب درج ہیں۔

پانچ دریاؤں کی سرزمین پنجاب کے تصویری مناظر

دریائے جہلم- یہ پنجاب کے پانچ دریاؤں میں سب سے مغربی دریا ہے۔ ایک روایت کے مطابق لفظ جہلم سنسکرت کے الفاظ ’جل‘ (پانی) اور ’ہم‘ (برف) سے مل کر بنا ہے۔

چائے

چائے دنیا میں پانی کے بعد سب سے زیادہ پیا جانے والا مشروب ہے جس کا استعمال وزن گھٹانے، کولیسٹرول کی سطح کم کرنے، جسمانی مدافعتی نظام کو مضبوط بنانے، بدن سے زہریلے مادے خارج کرنے ، سرکے درد اور ذہنی تفکرات سے نجات پانے میں بھی مفید ہے۔

ہلدی

ہلدی برسوں سے ہمارے روایتی کھانوں کا حصہ رہی ہے۔ پرانے زمانے میں ہلدی محض مصالے کا ایک جزو نہیں تھی بلکہ اسے بہت سی جسمانی تکالیف کے علاج کے لیے استعمال کیا جاتا تھا۔

کیا ساتواں کیلا جان لیوا ثابت ہوسکتا ہے؟

کیلے دنیا میں سب سے زیادہ پسند کیا جانے والا پھل ہے جس میں ویٹامنز اور منرلز (معدنیات) ہیں۔

ہرا دھنیا

ہرے دھنیے کو جنوبی ایشیائی کھانوں کا ایک لازمی جزو تصور کیا جاتا ہے جبکہ اس کی تازہ پتیوں کا مزہ اورخوشبو ہمیں میکسیکن اور تھائی کھانوں میں بھی ملتی ہے۔

اچھے حافظے کے لیے مچھلی کھائیے

امریکہ میں کی جانے والی ایک تحقیق کے مطابق ہفتے میں ایک بار کسی قسم کی بھی مچھلی کھانا دماغی صحت کے لیے فائدہ مند ہے۔

انار

انار پر ایک سال کے دوران 194 مطالعے شائع ہوئے ہیں جو کسی بھی دوسرے پھل کے مقابلے میں بہت زیادہ ہیں۔ ماہرین کہتے ہیں کہ انار میں قدرت کی طرف سے شفا یابی کا راز چھپا ہوا ہے۔

عظیم دیوار چین

زمانہ قبل از مسیح میں چین چھوٹی چھوٹی ریاستوں میں بٹا ہوا تھا اور ان ریاستوں نے اپنی اپنی سرحدوں کی حفاظت کے لئے بڑی بڑی دیواریں تعمیر کررکھی تھیں۔

سب سے پہلی فلم کس نے بنائی تھی؟

لیومیئر برادرز اور تھامس ایڈیسن کو عموماً پہلی حرکت کرتی ہوئی فلم بنانے کا کریڈٹ دیا جاتا ہے۔ تاہم ایک نئی ڈاکیومنٹری میں یہ کہا گیا ہے کہ پہلی فلم اصل میں 1888 میں لیڈز میں بنائی گئی تھی۔

راجیش کھنہ

بالی وڈ کو حقیقی سپر اسٹار کا تصور دینے والے راجیش جنھیں پیار سے ’کاکا‘ کہا جاتا تھا، ان کی ذاتی زندگی بھی کسی فلم ہی کی طرح نشیب و فراز سے پر رہی۔

راج کپور

فلموں میں ’کلیپ بوائے‘ کے طور پر اپنی فنی زندگی کا آغاز کرنے والے راج کپور نے نہ صرف اپنے والد پرتھوی راج کپور کی فنی وراثت کے دباؤ میں اپنا تخلیقی سفر طے کیا

راج کمار

راج کمار نے اپنے کیریئر کا آغاز 1940کی دہائی کے اواخر میں بمبئی پولیس میں ایک سب انسپکٹر کی حیثیت سے کیا تھا۔ اس کے بعد وہ اداکاری کی طرف مائل ہوگئے، جس کے نتیجے میں 1952میں ان کی پہلی فلم ’’رنگیلی‘‘ منظر عام پر آئی

بالی وڈ کے یادگار مکالمے

سڑک پر ایک بھوکا انسان بھیک مانگ رہا ہے لیکن اس کی کوئی مدد نہیں کرتا۔
ہیرو: ’روٹی مانگنے سے نہیں ملے تو چھین کر لے لے .... مار کر لے لے۔‘
روٹی (1941)

پران

پران ہندی سنیما کے بہترین فنکار اور شاید سب سے سجیلے ولن اور بااثر کردار اداکار تھے۔

اشوک کمار

اشوک کمار بالی ووڈ فلموں کے ایسے ایکٹر تھے جنہوں نے اراد تاً فلمی دنیا کا رخ نہیں کیا تھا بلکہ وہ حادثاتی طور پر ایکٹر بنے مگر کامیابی نے ایک بار ان کا ہاتھ تھاما تو پھرکبھی انہیں پیچھے مڑ کر دیکھنے نہیں دیا

دلیپ کمار

یوسف خان عرف دلیپ کمار پشاور کے علاقے قصہ خوانی میں 11 دسمبر 1922 کو پیدا ہوئے، ان کے والد لالہ غلام سرور پھلوں کے ایک تاجر تھے جن کے پشاور اور ناسک کے قریب پھلوں کے باغات تھے۔

انجن ڈرائیور کو انجینيئر کیوں کہا جاتا ہے؟

امریکہ میں ٹرین چلانے والے کو ڈرائیور کے بجائے انجینيئر کیوں کہا جاتا ہے؟

’انکا‘ کی قدیم سڑک عالمی ورثے میں شامل

انکا سلطنت کی تعمیر کی ہوئی سڑک کے نظام کو اقوام متحدہ کی تنظیم برائے ثقافت، یونیسکو نے عالمی ورثے کا درجہ دے دیا ہے۔

ہندو بھی گائے کھاتے تھے

قدیم ہندوستان کے ویدک ادب میں ایسی کئی شواہد ہیں جن سے پتہ چلتا ہے کہ اس دور میں بھی گائے کے گوشت کا استعمال کیا جاتا تھا۔

اخبار کی کہانی

اخبار آج ہماری زندگی میں کتنا داخل ہو چکا ہے، اس پر ہم نے مشکل ہی سے غور کیا ہے۔ شاید یہ کہنا غلط نہ ہو گا کہ اخبار ہمارے آج کے تہذیب و تمدّن کی بہترین تصویر پیش کر دیتا ہے۔

جب پاکستان نے بھارت کے دس جنگی طیارے تباہ کیے

وہ چھ ستمبر سنہ 1965 کا دن تھا، وقت دوپہر چار بجے اور مقام پاکستان کا پشاور ایئر بیس۔

عربی زبان اور ادب

عربی زبان و ادب عرب قوم سامی اقوام کی ایک شاخ ہے۔ ان قوموں میں بابلی، سریانی فینیقی، آرمینی، حبشی، سبئی اور عربوں کو شامل کیا جاتا ہے۔

اردو۔ ہندی دنیا کی دوسری بڑی زبان

دنیا بھر میں بولی اور سمجھی جانی والی زبانوں میں سے اردو ہندی دنیا کی دوسری بڑی زبان بن چکی ہے، جبکہ اول نمبر پر آنے والی زبان چینی ہے اور انگریزی کا نمبر تیسرا ہے۔

انگریزی زبان و ادب

انگریزی زبان کی درجہ بندی ایک ٹیوٹنی (Teutonic) زبان کی حیثیت سے کی جاتی ہے۔ اور اس کا تعلق ہند یورپین زبانوں کے اس خاندان سے ہے جس میں جرمن، ڈچ، فلیمش (Flemish) سوِڈِش اور ناروے کی زبانیں شامل ہیں۔

ہاسٹل میں پڑنا

ہم نے کالج میں تعلیم تو ضرور پائی اور رفتہ رفتہ بی اے بھی پاس کر لیا، لیکن اس نصف صدی کے دوران میں جو کالج میں گزارنی پڑی۔ ہاسٹل میں داخل ہونے کی اجازت ہمیں صرف ایک ہی دفعہ ملی۔ .

روسی زبان اور ادب

روسی زبان بھی روسی نسل کی طرح کئی یورپی اور ایشیائی نسلوں کا مرکب ہے۔ اور سلاف خاندان سے تعلق رکھتی ہے۔

اردو زبان و ادب

اردو، ترکی زبان کا لفظ ہے اس کے لفظی معنی ’’خیمہ‘‘ یا چھاؤنی (لشکر گاہ) کے ہیں اس لفظ کا استعمال شہنشاہ اکبر کے زمانے کے سکوں پر پایا جاتا ہے۔

مرحوم کی یاد میں

ایک دن مرزا صاحب اور میں برآمدے میں ساتھ ساتھ کرسیاں ڈالے چپ چاپ بیٹھے تھے۔ جب دوستی بہت پرانی ہو جائے تو گفتگو کی چنداں ضرورت باقی نہیں رہتی۔ اور دوست ایک دوسرے کی خاموشی سے لطف اندوز ہو سکتے ہیں۔ .

لاہور کا جغرافیہ

تمہید کے طور پر صرف اتنا عرض کرنا چاہتا ہوں کہ لاہور کو دریافت ہوئے اب بہت عرصہ گزر چکا ہے، اس لیے دلائل و براہین سے اس کے وجود کو ثابت کرنے کی ضرورت نہیں۔ .

سویرے جو کل آنکھ میری کھلی

گیدڑ کی موت آتی ہے تو شہر کی طرف دوڑتا ہے۔ ہماری جو شامت آئی تو ایک دن اپنے پڑوسی لالہ کرپا شنکر جی برہمچاری سے برسبیل تذکرہ کہہ بیٹھے .

کتّے

علم الحیوانات کے پروفیسروں سے پوچھا۔ سلوتریوں سے دریافت کیا۔ خود سر کھپاتے رہے۔ لیکن کبھی سمجھ میں نہ آیا کہ آخر کتوں کا فائدہ کیا ہے؟ گائے کو لیجئے دودھ دیتی ہے۔ .

جرمن زبان اور ادب

جرمن زبان کی سب سے پہلی تحریر آٹھویں صدی عیسوی میں ملتی ہے۔ گویا اس طرح اس کی تاریخ لکھتے ہوئے ہمیں پچھلے بارہ سو برس کا احاطہ کرنا پڑے گا۔

سنسکرت زبان اور ادب

سنسکرت ہندوستان کی قدیم زبان ہے جس میں ہندوؤں کا بہت سا مذہبی اور فلسفیانہ ادب تصنیف کیا گیا ہے۔ آج بھی یہ مستند زبان ہے اور ہر سال اس زبان میں مختلف رسالے اور کتابیں شائع ہوتی ہیں۔

چینی زبان اور ادب

چین میں کئی نسلیں یا قومیں آباد ہیں۔ اکثریت جس نسل کی ہے اس کا نام ہان ہے۔ چین کی ۹۳ فی صد آبادی اسی نسل کی ہے۔ اور چینی زبان سے مراد اسی اکثریت کی زبان ہے۔

فرانسیسی زبان اور ادب

فرانسیسی کا تعلق زبانوں کے ہند آریائی خاندان سے ہے۔ یورپ کے جو علاقے اب فرانس کی حدود میں داخل ہیں وہ پہلے سلطنت روما میں شامل تھے۔ اور وہاں کی زبان لاطینی تھی۔

اردو کی آخری کتاب

ماں بچے کو گود میں لیے بیٹھی ہے۔ باپ انگوٹھا چوس رہا ہے اور دیکھ دیکھ کر خوش ہوتا ہے۔ بچہ حسب معمول آنکھیں کھولے پڑا ہے۔ .

میں ایک میاں ہوں

میں ایک میاں ہوں۔ مطیع و فرمانبردار، اپنی بیوی روشن آراء کو اپنی زندگی کی ہر ایک بات سے آگاہ رکھنا اصول زندگی سمجھتا ہوں اور ہمیشہ اس پر کاربند رہا ہوں۔ .

مرید پور کا پیر

اکثر لوگوں کو اس بات کا تعجب ہوتا ہے کہ میں اپنے وطن کا ذکر کبھی نہیں کرتا۔ بعض اس بات پر بھی حیران ہیں کہ میں اب کبھی اپنے وطن کو نہیں جاتا۔ .

انجام بخیر

زمین پر ایک چٹائی بچھی ہے جس پر بےشمار کتابوں کا انبار لگا ہے۔ اس میں سے جہاں جہاں کتابوں کی پشتیں نظر آتی ہیں .

سینما کا عشق

“سینما کا عشق” عنوان تو عجب ہوس خیز ہے۔ لیکن افسوس کہ اس مضمون سے آپ کی تمام توقعات مجروح ہوں گی۔ کیونکہ مجھے تو اس مضمون میں کچھ دل کے داغ دکھانے مقصود ہیں۔ .

میبل اور میں

میبل لڑکیوں کے کالج میں تھی، لیکن ہم دونوں کیمبرج یونیورسٹی میں ایک ہی مضمون پڑھتے تھے۔ اس لیے اکثر لیکچروں میں ملاقات ہو جاتی تھی۔ .

اخبار میں ضرورت ہے

یہ ایک اشتہار ہے لیکن چونکہ عام اشتہار بازوں سے بہت زیادہ طویل ہے اس لئے شروع میں یہ بتا دینا مناسب معلوم ہوا ورنہ شاید آپ پہچاننے نہ پاتے۔ میں اشتہار دینے والا ایک روزنامہ اخبار کا ایڈیٹر ہوں۔ .

کاغذی روپیہ

خواجہ علی احمد شہر کے بڑے سوداگر تھے۔ لاکھوں کا کاروبار چلتا تھا۔ لوگوں میں عزت کی نگاہ سے دیکھے جاتے تھے۔ .

نوع انسان کی کہانی

انسان سب آخر میں آیا لیکن عقل کے ذریعے قدرت کی طاقتوں کو تسخیر سب سے پہلے کیا۔ اسی لئے ہم بلیوں یا کتوں یا گھوڑوں یا دوسرے جانوروں کی بجائے انسان ہی کی تاریخ کا مطالعہ کریں گے گو اپنی اپنی جگہ ہر ایک کی تاریخ بہت دلچسپ ہے۔ .

وہ سچ جو کبھی جھوٹ نہ ہو گا

میں انسانی زندگی کی الجھنوں پر جس قدر غور کرتا ہوں اتنا ہی مجھ پر روشن تر ہوتا جاتا ہے کہ جس طرح قدیم مصر کے لوگ بخشش اور نجات کے لئے آئیس اور نیفتیس کا دامن پکڑتے تھے .

بچے کا پہلا سال

ایک زمانہ ایسا تھا کہ لوگ بچے کی عمر کے پہلے سال کو تعلیم کے دائرے سے خارج سمجھتے تھے۔ جب تک بچہ کم از کم بولنا شروع نہ کرتا۔ اسے صرف ماں یا دایہ کی زیر نگرانی رکھا جاتا تھا۔ .

مکھیوں کا بادشاہ

ایک دن سقراط گاؤں کے ا سکول میں آیا۔ سب لوگ اسے جانتے تو تھے ہی۔ جونہی بچے بچیوں نے اس کی صورت دیکھی، ان کے چہرے خوشی سے چمک اٹھے۔ پڑھنا لکھنا بھول گیا۔ .

ہمارے زمانے کا اردو ادیب

پطرس مرحوم نے یہ مقالہ ۱۹۴۵ء میں پی ای این کے سالانہ اجلاس منعقدہ جے پور میں پڑھا تھا۔ اس میں انہوں نے اردو ادب کے جدید دور یعنی اقبال کے فوراً بعد کے زمانے کو موضوع بنایا تھا۔ اور اپنے مخصوص چبھتے ہوئے انداز میں اس پر رائے زنی کی تھی۔ .

دوست کے نام

از لاہور اے میرے کراچی کے دوست! چند دن ہوئے میں نے اخبار میں یہ خبر پڑھی کہ کراچی میں فنون لطیفہ کی ایک انجمن قائم ہوئی ہے .

بچے

یہ تو آپ جانتے ہیں کہ بچوں کی کئی قسمیں ہیں مثلاً بلی کے بچے ، فاختہ کے بچے وغیرہ۔ مگر میری مراد صرف انسان کے بچوں سے ہے .

اب اور تب

جب مرض بہت پرانا ہو جائے اور صحت یابی کی کوئی امید باقی نہ رہے تو زندگی کی تمام مسرتیں محدود ہو کر بس یہیں تک رہ جاتی ہیں کہ چارپائی کے سرہانے میز پر جو انگور کا خوشا رکھا ہے اس کے چند دانے کھا لئے ، مہینے دو مہینے کے بعد کوٹھے پر غسل کر لیا یا گاہے گاہے ناخن ترشوا لئے۔ .

سر محمد اقبال

اقبال کی وفات سے ہندوستان ایک جلیل القدر شاعر سے کہیں زیادہ با عظمت ہستی سے محروم ہو گیا۔ .

کچھ عصمت چغتائی کے بارے میں

عصمت چغتائی کے افسانہ میں ایک لڑکی دوسری کے متعلق کہتی ہے کہ ”سعیدہ موٹی تھی تو کیا، کمزور تو حد سے زیادہ تھی بےچاری۔ .

ہیروئن

تالی ہمیشہ دو ہاتھ سے بجتی ہے۔ ادبی تالی بجانے کے لئے بھی دو ہاتھوں کی ضرورت پڑتی ہے .

ہیبت ناک افسانے

”ہیبت ناک افسانے“ کا پیکٹ جب یہاں پہنچا۔ میں گھر پر موجود نہ تھا۔ .

رونا رُلانا

ایک امریکن ادبی نقاد ایک مقام پر لکھتا ہے کہ مرد ایک ہنسوڑا جانور ہے اور عورت ایک ایسا حیوان ہے جو اکثر رونی شکل بنائے رہتا ہے۔ .

تاریخ قرآن مجید

رسول کریم صلی اللہ علیہ وسلم فرماتے ہیں کہ “اللہ نے حضرت آدم سے لے کر مجھ تک ایک لاکھ چوبیس ہزار پیغمبر بھیجے۔ جن میں سے تین سو پندرہ صاحب کتاب تھے “
خطبہ نمبر ۱، خطبات بہاولپور ڈاکٹر حمید اللہ

تاریخ حدیث

قرآن مجید کے بعد حدیث کا ذکر ناگزیر ہے، اس لیے کہ یہی دو چیزیں ہیں جو اسلام کا محور ہیں۔
خطبہ نمبر ۲، خطبات بہاولپور ڈاکٹر حمید اللہ

رسول اللہؐ کے خطوط بادشاہوں اور امراء کے نام

6 ھ کے اخیر میں جب رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم حدیبیہ سے واپس تشریف لائے تو آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے مختلف بادشاہوں کے نام خطوط لکھ کر انہیں اسلام کی دعوت دی۔

پیغمبر اسلام کی نو تلواریں

پیغمبر اسلام کے پاس نو تلواریں تھیں جن میں سے دو انھیں وراثت میں ملیں اور تین مال غنیمت میں حاصل ہوئیں۔

مملکتِ اسلامیہ

اسلام دین و دنیا دونوں جہانوں کی بھلائی چاہتا ہے، دونوں عالم کے لیے کوشش کرنے کی اجازت دیتا ہے اور دونوں جہانوں میں کامیاب بننے کا راستہ بتاتا ہے۔
خطبہ نمبر ۷، خطبات بہاولپور ڈاکٹر حمید اللہ